لاہور کی انسداد دہشتگردی عدالت کی طرف سے عمران خان کے لیے اچھی خبریں آگئ

انسداد دہشتگردی عدالت کی عدالت کے جج ارشد جاوید نے پی ٹی آئی کے بانی کی درخواست ضمانت پر فیصلہ سنایا۔  عدالت نے پانچ لاکھ روپے کے عوض ضمانت منظور کر لی۔

یہ امر اہم ہے کہ سابق وزیراعظم نے زمان پارک جلاؤ گھارو واقعہ سمیت چار مقدمات میں ضمانت کی درخواست کی تھی۔  پی ٹی آئی کے بانی کے خلاف تھانہ ریس کورس میں دو، ایک نصیر آباد اور دوسرا تھانہ ماڈل ٹاؤن میں درج کیا گیا۔

ایک بار پھر پی ٹی آئی میں بلامقابلہ انٹرا پارٹی انتخابات، بیرسٹر گوہر علی خان پارٹی کے بلامقابلہ چیئرمین منتخب

گزشتہ سال مارچ میں ذول شاہ قتل کیس میں تمام حقائق سامنے نہ آنے پر عمران خان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔  8 مارچ 2023 کو لاہور میں پی ٹی آئی کے جلسے کے دوران دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر پولیس نے کارروائی کی جس میں پی ٹی آئی کارکن علی بلال جان کی بازی ہار گئے۔

لاہور میں زمان پارک سے داتا دربار تک طے شدہ ریلی کی منسوخی کے بعد عمران خان نے ٹوئٹر پر پنجاب پولیس پر پارٹی کارکن علی بلال (ظل شاہ) کے قتل کا الزام لگایا۔

واقعے کے ردعمل میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب نے منصفانہ اور شواہد پر مبنی تحقیقات کا حکم دیا۔

منتخب ہونے والے اراکین اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات کے لیے ڈیڑھ ارب روپے بجٹ کی تیاری

18 مارچ 2023 کو جب پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان اسلام آباد میں جج کے سامنے پیش ہونے کے لیے زمان پارک لاہور میں واقع اپنے گھر سے نکلے تو پولیس نے ان کی رہائش گاہ پر سرچ آپریشن کیا۔  جس سے ان کی پارٹی کے حامیوں اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔

اس کے بعد پی ٹی آئی کے مختلف رہنماؤں اور کارکنوں کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت توڑ پھوڑ، جلاؤ گھیراؤ اور جلاؤ گھیراؤ کے مقدمات درج کیے گئے۔