منتخب ہونے والے اراکین اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات کے لیے ڈیڑھ ارب روپے بجٹ کی تیاری

قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے حال ہی میں منتخب ہونے والے اراکین اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات کے لیے ڈیڑھ ارب روپے کے مالیاتی بجٹ کی سفارشات مرتب کر دی ہیں۔  قومی اسمبلی کیش اینڈ اکاؤنٹس برانچ نے اس حوالے سے تجویز پیش کی ہے۔

تجویز کے مطابق اراکین اسمبلی کی تنخواہوں کے لیے 411.11 ملین روپے، دیگر الاؤنسز کے لیے 13.13 ملین روپے اور آپریشنل اخراجات کے لیے 89.10 ملین روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

پی ٹی ائی کو بتائے بغیر سنی اتحاد کونسل نے الیکشن کمیشن کو خط لکھ کر مخصوص نشستوں کو قبول کرنے سے انکار کردیا

ان کی تنخواہوں کے علاوہ، اراکین اسمبلی کو مختلف مراعات ملیں گے جیسے 25 بزنس کلاس ایئر ٹکٹ، تین لاکھ کے سفری واؤچر، نیلے پاسپورٹ، اور ریلوے میں مفت سفر کی سہولیات۔

مزید برآں، اراکین روزانہ TADA، کنوینس الاؤنس، خصوصی الاؤنس، اضافی الاؤنس، گھریلو الاؤنس، اور دیگر الاؤنسز سمیت متعدد الاؤنسز حاصل کرنے کے حقدار ہوں گے، جن کی رقم ہزاروں روپے ہوگی۔

نومنتخب اراکین کے ریگولر الاؤنس کے لیے 9.6 ملین روپے مختص کیے گئے ہیں، اس کے ساتھ ساتھ دیگر الاؤنسز کے لیے 3.4 ملین روپے اور ان کے سفری اور نقل و حمل کے اخراجات کے لیے 89.5 ملین روپے مختص کیے گئے ہیں۔

نومنتخب اراکین اسمبلی کی ماہانہ بنیادی تنخواہ 1 لاکھ 50 ہزار روپے ہوگی، تنخواہوں کی مد میں 38 ہزار روپے اضافی ہوں گے۔

مزید برآں، اراکین اسمبلی کو 10,000 روپے ٹیلی فون الاؤنس اور 8,000 روپے آفس الاؤنس ملے گا۔  مزید برآں، ان کی تنخواہ میں ایڈہاک ریلیف کے طور پر 15 ہزار روپے اور اضافی الاؤنس کے طور پر 5 ہزار روپے شامل ہوں گے۔

جانیے ضمنی انتخابات کتنی نشستوں اور کن حلقوں میں ہو گا

اسمبلی اجلاسوں کے دوران اراکین ہوائی سفر کے لیے 150 روپے اور زمینی سفر کے لیے 10 روپے فی کلومیٹر سفری الاؤنس کے اہل ہوں گے۔  انہیں ڈیوٹی کے دوران 2000 روپے یومیہ گھریلو الاؤنس بھی ملے گا۔

مزید برآں، اراکین اسمبلی کو تین لاکھ روپے مالیت کے سفری واؤچرز اور 25 بزنس کلاس کے مفت واپسی ٹکٹ فراہم کیے جائیں گے۔  مزید برآں، دونوں اراکین اسمبلی اور ان کے خاندان کے اراکین کو سرکاری پاسپورٹ پر سفر کرنے کا اختیار دیا جائے گا، ایم ایل ایز اور ان کے خاندان کے اراکین کو نیلے پاسپورٹ جاری کیے جائیں گے۔

قائمہ کمیٹی کے چیئرمین کا عہدہ سنبھالنے پر 25000 روپے اعزازیہ دیا جائے گا۔  اس کے علاوہ ممبر کو پرائیویٹ سیکرٹری، سٹینو گرافر، نائب قاصد، ڈرائیور اور ایک گاڑی ملے گی۔  کمیٹی کے چیئرمین کے طور پر، ایک 1300 سی سی گاڑی اور 600 لیٹر ایندھن ممبر کے اختیار میں ہوگا۔

پنجاب میں نو منتخب حکومت کی سولہ رکنی کابینہ کے نام سامنے آگۓ، کابینہ میں کتنے اتحادی شامل ہے

اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کی طرف سے عمران خان سمیت پی ٹی آئی کے رہنماؤں کے لیے بڑا ریلیف آگیا