بلاول بھٹو زرداری نے صدارت کے بعد صدر عارف علوی پر دو مقدمات دائر کرنے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد میں سپریم کورٹ میں بھٹو ریفرنس کی سماعت کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے اس یقین کا اظہار کیا کہ عارف علوی کی صدارت ناکافی ہے۔  انہوں نے کہا کہ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی تبدیلی کے بعد عارف علوی کو بھی تبدیل کر دیا جائے گا۔  بلاول بھٹو زرداری نے اپنے موقف کی مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ وہ عارف علوی کے خلاف دو ممکنہ مقدمات کی پیش گوئی کر رہے ہیں۔  ایک کیس اسمبلی توڑنے کی خلاف ورزی کا ہو گا جبکہ دوسرا کیس اسمبلی اجلاس بلانے کے آئینی تقاضے پر عمل نہ کرنے کا ہو گا۔

تیسری بار وزیر اعلیٰ منتخب ہوتے ہی مراد علی شاہ نے بڑے منصوبوں کا اعلان کر دیا

غور طلب ہے کہ صدر مملکت عارف علوی نو منتخب قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے سے انکار کرتے رہے ہیں اور انسپکشن ڈے کی سمری مسترد کر دی ہے۔  مزید برآں، 2022 میں عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کرنے کے بعد صدر عارف علوی نے قومی اسمبلی کو تحلیل کرنے کا اعلان کیا۔

بلاول بھٹو زرداری نے زور دے کر کہا کہ گورنرز کی تقرری کا فیصلہ آصف زرداری صدر منتخب ہونے کے بعد کریں گے۔  انہوں نے پیپلز پارٹی کی قیادت میں اپنے اور ملک کے لیے انصاف کے حصول پر اعتماد کا اظہار کیا۔  مزید برآں، بلاول بھٹو زرداری نے واضح کیا کہ پارٹی کے اندر گورنرز کی تقرری کا عمل ابھی شروع نہیں ہوا۔

انہوں نے آئین کی حدود میں کام کرنے والے تمام اداروں کی اہمیت پر زور دیا کیونکہ اس سے ایک مضبوط پاکستان میں مدد ملے گی۔  جس کے بعد آصف زرداری صدر کے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔

وزیراعلیٰ پنجاب بنتے ہی مریم نواز شریف نے طلباء کے لیے لیپ ٹاپ کے علاوہ اور زبردست منصوبوں کا اعلان کر دیا

وزیراعلیٰ پنجاب بنتے ہی مریم نواز نے 300 یونٹ سے کم بجلی کے بلوں والے صارفین کے لیے شاندار اعلان کر دیا

نو منتخب وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز کا پنجاب اسمبلی میں پہلا خطاب

صدر عارف علوی قومی اسمبلی کا افتتاحی اجلاس کیوں نہیں بلا رہے اور پاکستان کے آئین کے مطابق کیا وہ ایسا کر سکتے ہے