اسرائیل حماس کی سرنگوں کے جال میں پھنس کر مشکلات کا شکار ہو گیا

وال سٹریٹ جرنل کی رپورٹ کے مطابق حماس کی سرنگوں کو ختم کرنے کی اسرائیلی کوششوں کو چیلنجز کا سامنا ہے۔  امریکی اور اسرائیلی حکام نے اعتراف کیا ہے کہ غزہ میں اسرائیلی حکومت کی جانب سے جاری جارحیت کئی ہفتوں سے جاری ہے۔  تاہم، ان سرنگوں کا استقامت تنازع میں اسرائیل کے حتمی مقصد میں رکاوٹ ہے۔

نیپال نے دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ پر چڑھنے والے کوہ پیماوں پر نئی پابندی لگا دی

فارس نیوز کے مطابق حماس کی 80 فیصد بڑی سرنگیں برقرار ہیں، جس کی تصدیق امریکی اور اسرائیلی حکام نے کی ہے۔  سرنگوں کو تباہ کرنے میں ناکامی نے غزہ میں اسرائیل کے بنیادی اہداف میں خلل ڈالا ہے، جیسا کہ ان حکام نے کہا ہے۔

امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے اس بات پر روشنی ڈالی ہے کہ اسرائیلی حکام حماس کے سینئر رہنماؤں کو گرفتار کرنے اور قیدیوں کی رہائی کو محفوظ بنانے کی کوششوں میں سرنگوں کی وجہ سے پیدا ہونے والی رکاوٹ کو تسلیم کرتے ہیں۔  حماس کا ان سرنگوں کے استعمال کو روکنا اسرائیل کے لیے ایک اہم رکاوٹ بن گیا ہے۔

سرنگوں کو ختم کرنے کی کوشش میں صیہونی حکام نے غزہ میں ہسپتالوں اور دیگر اہم انفراسٹرکچر کو تباہ کرنے کا سہارا لیا۔  مختلف طریقے استعمال کیے گئے ہیں، جن میں بحیرہ روم کے پانی سے سرنگوں کو بھرنا، فضائی حملے کرنا، دھماکہ کرنے کے لیے مائع دھماکہ خیز مواد کا استعمال، اور تلاشی کے کاموں کے لیے کتوں اور روبوٹ کا استعمال شامل ہے۔  یہ طریقے سرنگوں سے لاحق خطرے کو بے اثر کرنے کے لیے اسرائیل کی کوششوں کی حد کو ظاہر کرتے ہیں۔

جاپان میں مستقل رہائش اور ملازمت کے لیے ویزا کیسے حاصل کیا جا سکتا ہے

کینیڈا نے فری لانسرز کو وزٹ ویزا پر کام کرنے کی اجازت دے دی

تحریک طالبان پاکستان کو پاکستان پر حملے کرنے میں کون مدد کرتا ہے۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ میں حیرت انگیز انکشافات