عمران خان سے ملاقات کے بعد اسد قیصر نے پی ٹی آئی کی طرف سے وزیراعظم کے نام کا اعلان کر دیا

عمر ایوب کو پی ٹی آئی نے پارٹی کے بانی عمران خان کی منظوری سے وزیراعظم نامزد کیا ہے۔

پی ٹی آئی رہنما اسد قیصر نے یہ اعلان اڈیالہ جیل راولپنڈی میں عمران خان سے ملاقات کے بعد کیا۔  ملاقات کے بعد اسد قیصر نے اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی نے عمر ایوب کو وزارت عظمیٰ کے لیے اپنا امیدوار منتخب کیا ہے۔

اسد قیصر نے زور دے کر کہا کہ ملک کے سیاسی اخبار کے بانی عمران خان سے ملاقات میں واضح کیا گیا کہ دھاندلی کے ذریعے بننے والی حکومت کا کوئی جواز نہیں ہو گا۔  اسد قیصر اسمبلی میں اپنی نشست چھین کر قانونی اور عوامی جنگ لڑنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

کیا جے یو آئی حکومت بنانے میں ن لیگ کا ساتھ دے گی، جے یو آئی کی مرکزی کمیٹی نے فیصلہ کر لیا

انہوں نے مزید کہا کہ تحریک انصاف کے بانی آج شام تک احتجاج کی تاریخ کا اعلان کریں گے، کیونکہ پی ٹی آئی ملک گیر احتجاجی تحریک شروع کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔  یہ بات مشہور ہے کہ الیکشن کے دوران پی ٹی آئی کا مینڈیٹ چرایا گیا۔

اسد قیصر نے یہ بھی بتایا کہ انہیں تمام سیاسی جماعتوں سے رابطے کا موقع دیا گیا ہے اور وہ انتخابی دھاندلی کے خلاف احتجاج کرنے والوں تک پہنچیں گے۔

احتجاجی لائحہ عمل کے حوالے سے اسد قیصر کا کہنا تھا کہ آئندہ دو روز میں پارلیمانی پارٹی کا اجلاس بلائیں گے۔  جے یو آئی، جماعت اسلامی، اے این پی اور قوم پرست جماعتوں کے نمائندوں کو اپنی رائے کا اظہار کرنے کا موقع ملے گا۔

انہوں نے اپنے یقین کا اظہار کیا کہ یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے زیادہ خامی والا الیکشن تھا اور تمام جماعتوں کو اکٹھے ہونے اور لائحہ عمل وضع کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔  عالمی برادری نے پاکستان میں حالیہ انتخابات کو تسلیم نہیں کیا۔

اسد قیصر نے امید ظاہر کی کہ پی ٹی آئی کے وزیر اعظم قومی اسمبلی میں اپنا عہدہ سنبھالیں گے۔  اس موقع پر موجود پی ٹی آئی رہنما بیرسٹرسیف نے بتایا کہ اسد قیصر کے بھائی عاقب اللہ خیبرپختونخوا اسمبلی کے اسپیکر کے طور پر کام کریں گے۔

جانیے آئندہ اتحادی جماعتوں کی حکومت کو کیا خطرناک چیلنجز درپیش ہوں گے