پاکستان میں آزاد امیدواروں کی اکثریتی کامیابی پر امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کا ردعمل آگیا

پاکستان میں پولنگ کے روز موبائل فون اور انٹرنیٹ کی بندش نے امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کے لیے تشویش میں اضافہ کر دیا ہے۔  ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان ویدانت پٹیل نے پاکستان میں عام انتخابات اور اس کے نتائج کے حوالے سے صحافیوں کے سوالات کا جواب دیا۔

ایک صحافی نے ابتدائی نتائج کے بارے میں استفسار کیا، خاص طور پر عمران خان کی جماعت 136 اضلاع میں برتری کا ذکر کیا۔  تاہم، ایسی رپورٹس اور ویڈیوز سامنے آئی ہیں جن میں ووٹ کے ساتھ ہیرا پھیری کی کوشش کی گئی ہے۔  صحافی نے خدشہ ظاہر کیا کہ 136 اضلاع میں یہ کامیابی شاید صبح تک برقرار نہ رہ سکے۔

اس کے جواب میں امریکی ترجمان نے زور دے کر کہا کہ موجودہ نتائج ابھی ابتدائی ہیں۔  حکومت کی تشکیل کے بارے میں کوئی نتیجہ اخذ کرنے یا قیاس آرائیاں کرنے سے پہلے سرکاری اعلان کا انتظار کرنا ضروری ہے۔

قومی اور صوبائی اسمبلیوں میں کتنی مخصوص نشستیں ہے اور انہیں کس فارمولے پر پارٹیوں کو دیا جاتا ہے

ایک اور صحافی نے ایک فرضی منظر نامہ اٹھایا جہاں پی ٹی آئی سے وابستہ آزاد امیدوار اکثریتی ووٹ حاصل کرتے ہیں، لیکن وزیر اعظم بننے کے لیے بیک ڈور مذاکرات کے ذریعے ایک مختلف امیدوار سامنے آتا ہے۔  صحافی نے سوال کیا کہ کیا یہ امریکہ کو قبول ہوگا؟

امریکی ترجمان نے اس معاملے پر قیاس آرائیوں سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ جب ایسی صورت حال پیدا ہو تب ہی تبصرہ کرنا مناسب ہو گا۔

ایک صحافی نے پھر سوال کیا کہ کیا انتخابات کے بعد امریکہ کے پاس پاکستانی عوام کے لیے کوئی پیغام ہے؟  تکرار پر معذرت کے بعد صحافی نے انتخابات کی متنازع نوعیت کا خصوصی طور پر ذکر کیا اور پوچھا کہ کیا اس کی روشنی میں امریکہ کے پاس پاکستانی عوام کے لیے کوئی پیغام ہے؟

جواب میں امریکی ترجمان نے ان لاکھوں پاکستانیوں کو اجاگر کیا جنہوں نے ووٹ کا حق استعمال کیا۔  انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ پاکستان کی مستقبل کی قیادت کا فیصلہ عوام کو کرنا ہے۔  امریکہ کا مفاد جمہوری عمل کے تسلسل میں ہے۔

امریکی ترجمان کی جانب سے انتخابات سے متعلق تشدد کی شدید مذمت کی گئی، انہوں نے موبائل فون اور انٹرنیٹ کی بندش کے حوالے سے بھی گہری تشویش کا اظہار کیا۔  ترجمان نے اس بات پر زور دیا کہ اس وقت آزادی اظہار کی خلاف ورزیوں کے کیسز کی مانیٹرنگ جاری ہے۔

پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی نے پاکستان میں آنے والی حکومت کے ساتھ مستقبل کے تعلقات کے بارے میں استفسار کیا۔  اس کے جواب میں، امریکی ترجمان نے حکومت پاکستان کے ساتھ شراکت داری کو فروغ دینے اور مضبوط کرنے کے لیے ضروری اقدامات کرنے میں دلچسپی کو اجاگر کیا۔

الیکشن کمیشن نے قومی اسمبلی کے حلقوں کے نتائج کا اعلان کر دیا۔بڑے بڑے سیاسی برج الٹ گئے

مایوس کن انتخابی نتائج نواز شریف ناراض ہو کر وکٹری سپیچ کیے بغیر ماڈل ٹاؤن سے چلے گے

پی ٹی آئی کے رہنما بیرسٹر گوہر علی خان نے حکومت بنانے کے حوالے سے بڑا اعلان کر دیا

پی ٹی ائی کے حمایت یافتہ ازاد امیدواروں کا خیبرپختونخوا میں کلین سویپ