پی ٹی آئی کے رہنما بیرسٹر گوہر علی خان نے حکومت بنانے کے حوالے سے بڑا اعلان کر دیا

پی ٹی آئی کے رہنما بیرسٹر گوہر علی خان کے مطابق، ہماری پارٹی نے مبینہ طور پر 150 نشستوں کی اکثریت حاصل کی ہے، جو ہمیں وفاق، پنجاب اور کے پی کے میں حکومت بنانے کے لیے پوزیشن میں رکھتی ہے۔

جیو نیوز کو انٹرویو کے دوران بیرسٹر گوہر علی خان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی تقرری سے متعلق ابھی فیصلہ نہیں ہوا۔

پی ٹی ائی کے حمایت یافتہ ازاد امیدواروں کا خیبرپختونخوا میں کلین سویپ

انہوں نے مخصوص نشستوں کے لیے پارٹی میں شمولیت کی اہمیت پر زور دیا اور ذکر کیا کہ یہ فیصلہ کرنے کے لیے دو ہفتے کی کھڑکی ہے کہ آیا دوسری پارٹی میں شامل ہونا ہے یا پی ٹی آئی کے ساتھ رہنا ہے۔

بیرسٹر گوہر علی خان نے واضح کیا کہ کسی اور جماعت کے ساتھ اتحاد کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔  پارٹی انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا ارادہ رکھتی ہے، جیسا کہ حال ہی میں جاری کردہ نوٹیفکیشن میں اشارہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ انٹرا پارٹی الیکشن عام انتخابات کی وجہ سے ملتوی کیے گئے تھے اور عام انتخابات مکمل ہونے کے بعد ہوں گے۔

بیرسٹر گوہر علی خان نے امید ظاہر کی کہ تمام انتخابی نتائج صبح 10 بجے سے پہلے دستیاب ہو جائیں گے، جس سے پی ٹی آئی پارلیمنٹ کا حصہ بن سکے گی۔

انہوں نے یقین دلایا کہ کسی بھی چیلنج یا مسائل کو پارلیمنٹ کے اندر حل کیا جائے گا، اور وہ جمہوریت کو فروغ دینے اور معیشت کو مضبوط بنانے کے لیے تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ بات چیت کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

سندھ بھر کی مختلف جیلوں میں 20 ہزار ووٹ ضائع ہو گے

مزید برآں بیرسٹر گوہر علی خان نے کہا کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے درمیان اتحاد کا کوئی امکان نہیں۔  وہ دیگر جماعتوں کے ساتھ ممکنہ اتحاد کے حوالے سے پارٹی سے مشاورت کریں گے۔