جدید ٹیکنالوجی کا استعمال، پی ٹی آئی امیدواروں اور ان کے حلقوں کو کیسے تلاش کرے، پی ٹی آئی نے جدید طریقہ ڈھونڈ لیا

جدید ٹیکنالوجی کا استعمال، پی ٹی آئی امیدواروں اور ان کے حلقوں کو کیسے تلاش کرے، پی ٹی آئی نے جدید طریقہ ڈھونڈ لیا

 

 

پی ٹی آئی کے امیدواروں کے بلے کے نشان سے دستبرداری کے بعد اب وہ آزاد امیدوار کی حیثیت سے عام انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔  ہر امیدوار کو الگ انتخابی نشان تفویض کیا گیا ہے۔

اپنے پیروکاروں کو آگاہ کرنے کے لیے پی ٹی آئی نے سوشل میڈیا کا رخ کیا ہے جہاں وہ اپنی انتخابی مہم چلا رہے ہیں۔  انہوں نے اپنے آفیشل ایکس ہینڈل پر ایک پوسٹ شیئر کی ہے، جس میں رہنمائی فراہم کی گئی ہے کہ پی ٹی آئی امیدوار اور ان کے متعلقہ حلقے کے الاٹ کردہ انتخابی نشان کو کیسے تلاش کیا جائے۔

نگراں وفاقی کابینہ نے آئندہ انتخابات کے دوران فوج اور سول آرمڈ فورسز کی تعیناتی کی منظوری دے دی ہے

پی ٹی آئی کی جانب سے پوسٹ کے کیپشن میں کہا گیا ہے، "اپنے حلقے کے لیے پی ٹی آئی کے نامزد امیدوار کو ان کے الاٹ کردہ انتخابی نشان کے ساتھ تلاش کرنے کا ایک اور جدید طریقہ یہ ہے!”

فالورز سے گزارش ہے کہ وہ فراہم کردہ لنک کا استعمال کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے بانی عمران خان کے آفیشل فیس بک پیج پر اپنے حلقہ نمبر کے ساتھ میسج کریں۔  درخواست کی گئی معلومات منٹوں میں انہیں بھیج دی جائیں گی۔

مزید برآں، پی ٹی آئی نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کی جانب سے فراہم کردہ خدمات کو استعمال کر رہی ہے تاکہ ان کے حامیوں کو ان کے نامزد کردہ حلقوں میں امیدواروں کے انتخابی نشانات کی شناخت میں مدد ملے۔  پوسٹ میں پیروکاروں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ اپنا حلقہ نمبر معلوم کرنے کے لیے اپنا شناختی نمبر 8300 پر بھیجیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان انتخابی نتائج کا اعلان کب کرے گا اور الیکشن میں کون سی نئی ٹیکنالوجی کا استعمال کرے گا

یہ امر اہم ہے کہ نادرا کی جانب سے کوڈ 8300 ان شہریوں کے لیے جاری کیا گیا ہے جو یہ دیکھنا چاہتے ہیں کہ آیا ان کا نام ووٹر لسٹ میں شامل ہے یا نہیں اور اگر ایسا ہے تو یہ کہاں شامل ہے۔

پوسٹل بیلٹ کے ذریعے آپ ووٹ کیسے کاسٹ کر سکتے ہے اور یہ انتخابی نتائج پر کتنا اثر انداز ہو سکتے ہیں

الیکشن میں مصنوعی ذہانت کا بڑھتا ہوا رجحان الیکشن پر کتنا اثرانداز ہو سکتا ہے

عام انتخابات کی رپورٹنگ کرنے کے لیے وفاقی حکومت کے 35 غیر ملکی صحافیوں کو اجازت نامے جاری