پاکستان اور ایران کے وزرائے خارجہ کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ، 26 جنوری تک سفیر واپس بلانے پر اتفاق

پاکستان اور ایران کے وزرائے خارجہ کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ، 26 جنوری تک سفیر واپس بلانے پر اتفاق

 

 

پاکستان اور ایران کے وزرائے خارجہ کے درمیان ہونے والی ٹیلی فونک گفتگو کے بعد دونوں ممالک نے 26 جنوری تک سفارتی تعلقات کی بحالی اور صفرا کی دوبارہ تعیناتی کا اعلان کیا ہے۔ مزید برآں، ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے پاکستانی ہم منصب کی جانب سے 29 جنوری کو دورہ پاکستان کی دعوت قبول کر لی ہے۔

پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبدالحیان وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی کی دعوت پر 29 جنوری کو پاکستان کا دورہ کریں گے۔

پی ٹی آئی کے بانی عمران خان اور اڈیالہ جیل کے سپرنٹنڈنٹ کے درمیان تلخ کلامی

دونوں ممالک کے درمیان حالیہ اختلافات کی روشنی میں، نقصان پر قابو پانے اور تعلقات کی بحالی کے لیے باہمی سیاسی کوششیں کی گئی ہیں، جس کے نتیجے میں نمایاں بہتری آئی ہے۔  تاہم ان حملوں سے دونوں فریقوں کے درمیان اعتماد متاثر ہوا ہے اور اسے مکمل طور پر بحال ہونے میں وقت لگے گا۔

خوش قسمتی سے دونوں ممالک اپنے تعلقات کو تصادم کی طرف بڑھنے سے روکنے میں کامیاب رہے۔

چین اور روس نے ان حملوں کے فوراً بعد مثبت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے حالات معمول پر لانے کی خواہش کا اظہار کیا۔  دوسری طرف بھارت جیسے کچھ ممالک کے ارادے مختلف نظر آتے ہیں۔

سابق ڈی جی آئی ایس آئی فیض حمید نے شوکت عزیز صدیقی کیس سے متعلق سپریم کورٹ میں جواب جمع کروا دیا

ایران میں چین کی سرمایہ کاری پاکستان سے زیادہ ہے اور دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں کسی قسم کی خرابی چین کے اقتصادی مقاصد کو ممکنہ طور پر نقصان پہنچا سکتی ہے۔  حملوں کے فوراً بعد چین کی جانب سے جاری کیے گئے بیانات سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ کون سے ممالک ان تعلقات کو معمول پر لانے کے حق میں تھے۔

نگراں وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی کو ایک اور بڑا عہدہ دینے کا فیصلہ

سائفر کیس کی سماعت میں شاہ محمود قریشی اور پراسیکیوٹر رضوان عباسی کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ

پی ٹی آئی کے بانی عمران خان کے خلاف توشہ خانہ ریفرنس میں ہندوستانی کمپنی کے سیلز مین کا بیان ریکارڈ