پاکستانی فوج کی جانب سے سخت جواب کے بعد ایران کی فضائی دفاعی مشقیں

پاکستانی فوج
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پاکستانی فوج کی جانب سے سخت جواب کے بعد ایران کی فضائی دفاعی مشقیں

 

پاکستانی فوج
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پاکستانی فوج کی جانب سے سیستان-بلوچستان میں حالیہ مقامات کو نشانہ بنانے کے جواب میں، ایران نے فضائی دفاعی مشقیں کی ہیں جس میں ایرانی سرحد کو نشانہ بنانے والے میزائلوں کو روکنے کے لیے جدید طریقہ کار کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔

اس نئی تکنیک میں مطلوبہ اہداف کی نگرانی اور مشغولیت کے لیے ڈرون کا استعمال شامل ہے۔  ایرانی فضائیہ نے یہ جامع مشقیں پاک فوج کے ایرانی اہداف پر حملے کے فوراً بعد شروع کیں۔

جانیے پاکستان اور ایران کے درمیان کشیدگی پر عالمی برادری کا رد عمل

ایران نے واضح کیا ہے کہ ان دفاعی مشقوں کا بنیادی مقصد خطے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی کو مدنظر رکھتے ہوئے مخالفین کی جانب سے کسی بھی ممکنہ جارحیت کو روکنا تھا۔  ان مشقوں میں خاص طور پر ڈیزائن کیے گئے ڈرونز نے اہم کردار ادا کیا۔

جمعرات کو شروع ہونے والی یہ مشقیں ایران کے جنوب مغربی صوبہ خوزستان میں آبادان سے لے کر جنوب مشرقی صوبہ سیستان بلوچستان کے چابہار تک پھیلے ہوئے ایک وسیع علاقے کو گھیرے ہوئے ہیں۔  ان علاقوں کی سرحدیں پاکستان اور افغانستان سے ملتی ہیں۔

امریکہ کا تارکین وطن کے انٹرویو کی شرائط میں تبدیلی کا اعلان