دنیا میں سب سے یادہ بینکوں میں سونے کے ذخائر کس ملک کے پاس ہے، ورلڈ گولڈ کونسل نے رپورٹ شائع کر دی

ورلڈ گولڈ کونسل
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

دنیا میں سب سے یادہ بینکوں میں سونے کے ذخائر کس ملک کے پاس ہے، ورلڈ گولڈ کونسل نے رپورٹ شائع کر دی

 

ورلڈ گولڈ کونسل
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

دنیا بھر کی تمام قومیں اپنے مرکزی بینکوں میں سونے کے ذخائر کو مشکل وقت میں مالیاتی چیلنجوں کے خلاف حفاظت کے طور پر برقرار رکھتی ہیں۔

تاریخی طور پر، سونے کے ذخائر نے متعدد کرنسیوں کی قدر کو سہارا دینے میں ایک اہم کردار ادا کیا ہے، اور کچھ ممالک آج بھی انہیں اپنی کرنسیوں کی قدر کو محفوظ رکھنے کا ذریعہ سمجھتے ہیں۔

سونے کی قیمت کا امریکی ڈالر کی قیمت سے گہرا تعلق ہے۔  جب ڈالر کمزور ہوتا ہے، تو سونے کی قیمت بڑھ جاتی ہے، اور اس کے برعکس۔  یہ سونے کے ذخائر کو اور بھی اہم بناتا ہے کیونکہ یہ مرکزی بینکوں کو مارکیٹ کے اتار چڑھاو کے دوران اپنے ذخائر کی حفاظت میں مدد کرتے ہیں۔

ورلڈ گولڈ کونسل کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق، ریاستہائے متحدہ میں سونے کے سب سے بڑے ذخائر ہیں، جن کی مقدار 8,133 ٹن ہے۔

جرمنی 3,352 ٹن کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے، اس کے بعد اٹلی 2,451 ٹن کے ساتھ، فرانس 2,436 ٹن کے ساتھ، روس 2,332 ٹن کے ساتھ اور چین 2,191 ٹن کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے۔  سوئٹزرلینڈ 1,040 ٹن کے ساتھ ساتویں نمبر پر ہے، جب کہ جاپان، بھارت اور نیدرلینڈز بالترتیب 845 ٹن، 800 ٹن اور 612 ٹن سونے کے ذخائر کے ساتھ آٹھویں، نویں اور دسویں نمبر پر ہیں۔

ورلڈ گولڈ کونسل کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق پاکستان اس فہرست میں 46 ویں نمبر پر ہے جس کے پاس 64 ٹن سونے کے ذخائر ہیں۔

رپورٹ میں روشنی ڈالی گئی ہے کہ پاکستان کے سونے کے ذخائر 2023 کی دوسری سہ ماہی سے 2023 کی تیسری سہ ماہی تک 64.66 ٹن پر مستحکم رہے۔ مزید برآں، رپورٹ کے مطابق، پاکستان میں سونے کے کل ذخائر 2000 سے 2023 تک 64.82 ٹن تھے۔