پاک فضائیہ کے لڑاکا طیاروں کے بیڑے میں جدید ترین ٹیکنالوجی کا حامل فائفتھ جنریشن اسٹیلتھ لڑاکا طیارہ شامل

فائفتھ جنریشن اسٹیلتھ لڑاکا طیارہ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پاک فضائیہ کے لڑاکا طیاروں کے بیڑے میں جدید ترین ٹیکنالوجی کا حامل فائفتھ جنریشن اسٹیلتھ لڑاکا طیارہ شامل

 

فائفتھ جنریشن اسٹیلتھ لڑاکا طیارہ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پاک فضائیہ نے اعلان کیا ہے کہ وہ دوست ممالک کے تعاون سے فائفتھ جنریشن کے اسٹیلتھ لڑاکا طیاروں کو اپنے موجودہ لڑاکا طیاروں کے بیڑے میں شامل کرنے کی بنیاد رکھ رہی ہے۔

جاری ہونے والے ایک بیان میں پاک فضائیہ کے ترجمان نے زور دے کر کہا کہ یہ پیشرفت فورس کی تزویراتی کامیابیوں میں ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگی۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ پاک فضائیہ نے دوست ممالک سے جدید نظام کی خریداری اور موجودہ بین الاقوامی تزویراتی خطرات کی روشنی میں اپنے آپریشنز کو جدید بنانے کے لیے اہم اقدامات کیے ہیں۔  فائفتھ جنریشن کے اسٹیلتھ لڑاکا طیاروں کی شمولیت سے ملک کے ناقابل تسخیر دفاع کو یقینی بنانے میں اہم کردار ادا کرنے کی امید ہے۔

دفاعی نظام میں پاکستان کی بڑی کامیابی ہائی ٹو میڈیم ایئر ڈیفنس ویپن سسٹم کا کامیاب تجربہ

ترجمان کے مطابق پاک فضائیہ نے جدید ترین ٹیکنالوجی، جنگی سازوسامان اور انسانی وسائل کو شامل کرتے ہوئے ایک "فائفتھ جنریشن” کی فضائیہ میں تبدیل کر دیا ہے۔  فورس نے جامع کراس ڈومین ملٹی ایرینا جنگی تیاری کے لیے ایک مضبوط انفراسٹرکچر قائم کیا ہے، جس میں ہوا بازی، خلائی، سائبر، مصنوعی ذہانت، اور انفارمیشن ٹیکنالوجی شامل ہیں۔

ان پیش رفتوں نے پاکستان کی دفاعی صلاحیتوں کو نمایاں طور پر تقویت بخشی ہے، جن میں J-10C لڑاکا طیاروں، ڈرونز، جدید الیکٹرونک وارفیئر پلیٹ فارمز، فورس ملٹی پلائرز، جدید مربوط فضائی دفاعی نظام، ایئر موبلٹی پلیٹ فارمز، اور ہائپرسونک میزائل کی صلاحیتوں کا اضافہ شامل ہے۔

پاکستان کا نیا میزائل فتح 2 میں کونسی ٹیکنالوجی ہے اور یہ کتنے کلومیٹر تک مار کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے