پی ٹی آئی کا بلے باز کے نشان پر الیکشن لڑنے کے پالان بی پر پی ٹی آئی نظریاتی کے چیئرمین اختر اقبال کا موقف آگیا

پی ٹی آئی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پی ٹی آئی کا بلے باز کے نشان پر الیکشن لڑنے کے پالان بی پر پی ٹی آئی نظریاتی کے چیئرمین اختر اقبال کا موقف آگیا

 

پی ٹی آئی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پی ٹی آئی نظریاتی کے چیئرمین اختر اقبال نے لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران پی ٹی آئی امیدواروں کے ٹکٹوں کے ذرائع کے حوالے سے اپنی الجھن کا اظہار کیا۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پارٹی نے یہ ٹکٹ جاری نہیں کیے اور سوال کیا کہ امیدواروں نے انہیں کیسے حاصل کیا۔  اختر اقبال نے مزید روشنی ڈالی کہ پارٹی وہی ٹکٹ استعمال کر رہی ہے جو 2018 میں جاری کیے گئے تھے۔

قصور میں ڈسٹرکٹ بار کے الیکشن 2024 میں آزاد گروپ بھاری اکثیریت سے کامیاب

انہوں نے ذکر کیا کہ الیکشن کمیشن نے واضح طور پر کہا ہے کہ ممبران اور امیدوار کسی دوسری پارٹی کا پلیٹ فارم استعمال نہیں کر سکتے۔  اختر اقبال نے وضاحت کی کہ پی ٹی آئی نظریاتی 2007 میں پارٹی کی جانب سے دھمکی، دھاندلی، غنڈہ گردی اور مالیاتی دعووں جیسے مسائل کو حل کرنے میں ناکامی کی وجہ سے قائم ہوئی تھی۔

بانی ارکان اور نظریات کے حامل افراد کو شامل کرکے ایک الگ جماعت قائم کی گئی۔  انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پی ٹی آئی نظریاتی کا اپنا منشور اور آئین ہے، جس کی توجہ بدعنوانی کے خلاف جنگ اور پاکستان کی بقا کو یقینی بنانا ہے۔

اختر اقبال نے انکشاف کیا کہ پی ٹی آئی نظریاتی نے پنجاب کے مختلف علاقوں سمیت ملک بھر میں 150 امیدواروں کو ٹکٹ جاری کیے ہیں، جبکہ پی ٹی آئی کی جانب سے جاری کردہ باقی ٹکٹوں کی صداقت کو بدنام کیا گیا ہے۔