پاکستان پیپلز پارٹی نے سندھ میں قومی اسمبلی کے لیے 53 اور صوبائی اسمبلی کے لیے 119 امیدواروں کو ٹکٹ جاری کر دیۓ

پاکستان پیپلز پارٹی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پاکستان پیپلز پارٹی نے سندھ میں قومی اسمبلی کے لیے 53 اور صوبائی اسمبلی کے لیے 119 امیدواروں کو ٹکٹ جاری کر دیۓ

 

پاکستان پیپلز پارٹی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے حال ہی میں ملک میں آئندہ عام انتخابات کے لیے پارٹی ٹکٹوں کی الاٹمنٹ کا اعلان کیا ہے۔  قومی اسمبلی کے لیے مجموعی طور پر 53 امیدواروں کا انتخاب کیا گیا ہے جب کہ سندھ سے صوبائی اسمبلی کے لیے 119 امیدواروں کا انتخاب کیا گیا ہے۔

جاری کردہ فہرست کے مطابق سابق صدر آصف علی زرداری شہید بینظیر آباد این اے 207 سے الیکشن لڑیں گے، پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری این اے 194 لاڑکانہ سے الیکشن میں حصہ لیں گے۔

قومی اسمبلی کے لیے قابل ذکر امیدواروں میں این اے 201 سکھر سے خورشید شاہ، این اے 209 سانگھڑ سے شازیہ مری، این اے 230 کراچی سے آغا رفیع اللہ، این اے 231 سے حکیم بلوچ، این اے 242 سے قادر مندوخیل اور قادر پٹیل شامل ہیں۔  این اے 239 لیاری۔

معروف صنعت کار مرزا اختر بیگ کو این اے 241 جنوبی کا پارٹی ٹکٹ دیا گیا ہے جب کہ وسیم اختر این اے 246 سے الیکشن لڑیں گے۔  تاہم پارٹی نے ابھی تک این اے 250، این اے 240 اور این اے 220 کے امیدواروں کا فیصلہ کرنا ہے۔

صوبائی اسمبلی میں فریال تالپور، مراد علی شاہ، سابق صوبائی وزیر سعید غنی، نجمی عالم، یوسف بلوچ، ساجد جوکھیو، محمود عالم جاموٹ، عذرا پیچوہو، ہری رام کشوری، امتیاز شیخ، آغا سراج درانی، شرجیل خان جیسی اہم شخصیات نے شرکت کی۔  انعام میمن، ناصر شاہ اور دیگر شامل ہیں۔  غور طلب ہے کہ پیپلز پارٹی نے پچھلی اسمبلی سے کئی جانے پہچانے چہروں کو میدان میں اتارا ہے۔

تاہم، پارٹی نے سندھ صوبائی اسمبلی کی 9 نشستوں کے لیے اپنے امیدواروں کو حتمی شکل نہیں دی ہے، جن میں بدین، خیرپور، گھوٹکی، ملیر، PS-117، اور جنوبی کراچی کے PS-109 شامل ہیں۔  مزید برآں، کشمور میں بجارانی اور مزاری کے انتخاب کے عمل میں اختلافات ہیں، اسی طرح این اے 232 میں کورنگی سمیت تین نشستیں ہیں۔