عمران خان اور بشریٰ بی بی کے پاس کتنے اثاثے ہیں تفصیلات منظر عام پر آ گئی

عمران خان اور بشریٰ بی بی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

عمران خان اور بشریٰ بی بی کے پاس کتنے اثاثے ہیں تفصیلات منظر عام پر آ گئی

 

عمران خان اور بشریٰ بی بی
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

کاغذات نامزدگی میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے بانی عمران خان اور بشریٰ بی بی کے اثاثوں سے متعلق نئی تفصیلات سامنے آگئی ہیں۔

پی ٹی آئی کے بانی کے اثاثوں میں گزشتہ پانچ سالوں میں 277.2 ملین روپے سے زائد کا نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔  2018 میں عمران خان کے اثاثوں کی مالیت 3 کروڑ 86 لاکھ 94 ہزار روپے تھی جو مجموعی طور پر 31 کروڑ 59 لاکھ 50 ہزار روپے سے تجاوز کر گئی۔

پی ٹی آئی کے سابق چیئرمین عمران خان نے زمان پارک لاہور میں 7 کنال 8 مرلے کے گھر کی وراثت کا انکشاف کیا، زمان پارک کے گھر کی تعمیر کے لیے 4 کروڑ 86 لاکھ روپے سے زائد رقم مختص کی گئی۔

اسی طرح عمران خان کو بنی گالہ میں 300 کنال اراضی کا تحفہ ملا جس میں بنی گالہ کے گھر کی خوبصورتی اور ریگولرائزیشن پر 39 لاکھ روپے سے زائد خرچ ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔

اس کے علاوہ عمران خان کے اثاثوں میں اسلام آباد کے علاقے مہرہ نور میں 50 لاکھ روپے سے زائد مالیت کی 6 کنال 16 مرلہ اراضی، اسلام آباد کے شاپنگ پلازہ میں 12 کروڑ روپے سے زائد مالیت کی دکان اور 2 کمروں پر مشتمل فلیٹ شامل ہیں۔  اسلام آباد پلازہ میں ایک لاکھ روپے۔

پی ٹی آئی کے سابق چیئرمین نے سرکاری دستاویزات میں بھکر میں 188 کنال اراضی کی وراثت کا بھی انکشاف کیا۔

دستاویزات کے مطابق عمران خان کے پاس کوئی گاڑی نہیں ہے۔  تاہم، اس کے پاس 31.5 ملین روپے سے زیادہ کی نقدی اور اسلام آباد کے مختلف بینک اکاؤنٹس میں 60 لاکھ روپے سے زیادہ ہیں۔  تفصیلات میں چار بکریوں کی ملکیت کا بھی ذکر ہے۔

دستاویزات میں مزید انکشاف ہوا ہے کہ توشہ خانہ سے خریدے گئے قیمتی سامان کی مالیت 1 کروڑ 18 لاکھ 77 ہزار روپے سے زائد بنتی ہے۔

جہاں تک بشریٰ بی بی کا تعلق ہے، کاغذات پاکپتن اور دیپالپور میں 698 کنال اراضی کی ملکیت بتاتے ہیں۔  اس کے علاوہ بنی گالہ میں 3 کنال کا گھر عمران خان کے کاغذات میں بشریٰ بی بی کے نام سے رجسٹرڈ ہے۔

2021 میں، پی ٹی آئی کے بانی نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کو 14.1 ملین روپے سے زائد مالیت کے اثاثوں کا انکشاف کیا، اس کے بعد 2022 میں 32 کروڑ روپے سے زائد کے اثاثے تھے۔

2023 میں ایف بی آر کے سرٹیفکیٹ کے مطابق عمران خان کے ظاہر کردہ اثاثوں کی رقم 31.59 روپے ہے۔

پی ٹی آئی کے سابق چیئرمین نے سیاسیات میں بیچلر آف آرٹس کے طور پر اپنے تعلیمی پس منظر کا انکشاف کیا ہے۔