ملک بھر میں کتنے پولنگ اسٹیشنز ہو گے اور کتنے پولنگ اسٹیشنز حساس اور  انتہائی حساس قرار

پولنگ اسٹیشنز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

ملک بھر میں کتنے پولنگ اسٹیشنز ہو گے اور کتنے پولنگ اسٹیشنز حساس اور  انتہائی حساس قرار

 

پولنگ اسٹیشنز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

الیکشن کمیشن نے ملک بھر میں پولنگ اسٹیشنز کی درجہ بندی مکمل کرتے ہوئے انہیں اے، بی اور سی کیٹیگریز میں تقسیم کر دیا ہے۔  کل 92,500 پولنگ اسٹیشنز میں سے 42,500 کو نارمل جبکہ 32,508 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔  مزید برآں، 17,500 سے زائد پولنگ سٹیشنوں کو انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے۔

انتخابی عمل کی سلامتی اور سالمیت کو یقینی بنانے کے لیے الیکشن کمیشن نے حساس ترین پولنگ اسٹیشنز پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔  صوبائی چیف سیکرٹریز اور ڈی آر اوز کو اس کام کو انجام دینے کے احکامات جاری کر دیے گئے ہیں۔

  1. جے یو آئی کے سندھ سے قومی اور صوبائی اسمبلی کے امیدواروں کے نام سامنے آ گے

ممکنہ بدامنی کے خدشات کو دور کرنے کے لیے ملک بھر میں 17,500 سے زیادہ انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنز پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے جائیں گے۔  یہ کیمرے ان پولنگ سٹیشنوں کے اندر تمام بوتھوں کا احاطہ کریں گے، جس سے انتخابی عمل، ووٹوں کی گنتی اور نتائج کی تیاری کی نگرانی کی جا سکے گی۔

خاص طور پر، پنجاب میں 6،599 نگرانی والے پولنگ اسٹیشن ہوں گے، سندھ میں 4،430، بلوچستان میں 2،038، اور خیبر پختونخوا میں 4،344 ہوں گے۔  یہ کیمرے ان علاقوں میں انتخابی سرگرمیوں کی مناسب نگرانی کو یقینی بنائیں گے۔

مزید یہ کہ پنجاب میں 15,829 حساس پولنگ اسٹیشنز، سندھ میں 8,030، بلوچستان میں 2,068 اور خیبر پختونخوا میں 6,500 سے زیادہ حساس پولنگ اسٹیشنز ہیں۔  محفوظ اور منصفانہ انتخابی عمل کو برقرار رکھنے کے لیے ان پولنگ اسٹیشنوں پر بھی زیادہ توجہ دی جائے گی۔