موٹروے پولیس نے یکم جنوری سے ٹریفک جرمانوں میں ہو شربا اضافہ کر دیا

موٹروے پولیس
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

موٹروے پولیس نے یکم جنوری سے ٹریفک جرمانوں میں ہو شربا اضافہ کر دیا

 

موٹروے پولیس
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

یکم جنوری سے ٹریفک جرمانوں کی شرح میں اضافہ ہوگا۔  ترجمان موٹروے پولیس کے مطابق بغیر ہیلمٹ موٹر سائیکل چلانے پر 1000 روپے جرمانہ ہوگا۔  اس کے علاوہ حد رفتار کی خلاف ورزی کرنے والے موٹر سائیکل سواروں پر 1500 روپے جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

حد رفتار سے تجاوز کرنے والے کار ڈرائیور کو 2500 روپے جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا جب کہ سیٹ بیلٹ نہ باندھنے پر 3000 روپے جرمانہ ہوگا۔

مزید برآں، ڈرائیونگ کے دوران موبائل فون استعمال کرنے پر موٹر سائیکل سواروں کو 500 روپے اور پبلک ٹرانسپورٹ کے ڈرائیوروں کو 2000 روپے جرمانہ ہو گا۔  غیر رجسٹرڈ موٹر سائیکل سواروں کو 2000 روپے جرمانہ بھی کیا جائے گا۔

اپنے نقصانات کو پورا کرنے کے لیے سوئی سدرن گیس نے صارفین پر 70 ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا

اس کے علاوہ اوور لوڈنگ کارگو گاڑیوں پر 10,000 روپے کا بھاری جرمانہ اور ہر قسم کی گاڑیوں پر 5000 روپے جرمانہ عائد کیا جائے گا جو ایمرجنسی گاڑیوں کو راستہ دینے میں ناکام رہیں۔

یہ تبدیلیاں نیشنل ہائی وے سیفٹی آرڈیننس 2000 کے ترمیم شدہ شیڈول کا حصہ ہیں، جس کا اطلاق یکم جنوری سے ہو گا۔ بغیر لائسنس موٹرسائیکل، کار، یا LTV ڈرائیوروں کو 5000 روپے جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا، جب کہ HTV PVS ڈرائیوروں کو 10,000 روپے جرمانہ کیا جائے گا۔  واضح رہے کہ یہ جرمانے یکم جنوری سے تمام شاہراہوں پر لاگو ہوں گے اور ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر سخت جرمانے عائد کیے جائیں گے۔