اپنے نقصانات کو پورا کرنے کے لیے سوئی سدرن گیس نے صارفین پر 70 ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا

سوئی سدرن گیس
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

اپنے نقصانات کو پورا کرنے کے لیے سوئی سدرن گیس نے صارفین پر 70 ارب روپے کا بوجھ ڈال دیا

 

سوئی سدرن گیس
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

نومبر کے بلوں میں سوئی سدرن گیس نے ماہانہ مقررہ چارجز شامل کرکے اپنے نقصانات کو پورا کرنے کی حکمت عملی تیار کی ہے۔  بتایا گیا ہے کہ اوگرا نے خاموشی سے ان چارجز کی وصولی کی اجازت دے دی ہے۔

حکام کے مطابق 0.9 ہیکٹر تک گیس استعمال کرنے والے صارفین کو ماہانہ 400 روپے مقررہ چارجز ادا کرنے ہوں گے جبکہ 1.5 ہیکٹر تک گیس کے غیر محفوظ استعمال کرنے والوں کو ماہانہ 1000 روپے کا اضافی بل ادا کرنا پڑے گا۔

اس حد سے تجاوز کرنے والوں سے ماہانہ 2,000 روپے کی اضافی مقررہ رقم وصول کی جائے گی۔  سوئی گیس کے حکام کے مطابق، صفر کی کھپت والے صارفین کو بھی 400 روپے ادا کرنے ہوں گے۔  ان ماہانہ فکسڈ چارجز کو حکومت نے منظور کیا ہے۔

پنجاب کی نگران حکومت کا زبردست اقدام چار بڑے منصوبوں کا اعلان

اگر صارفین ان اضافی چارجز کو چیلنج کرنا چاہتے ہیں، تو وہ صرف ہائی کورٹ میں ہی ایسا کر سکتے ہیں۔  ماہانہ فکسڈ ٹیکس 80 لاکھ گیس صارفین پر لاگو ہوگا۔  ایک اندازے کے مطابق ان چارجز سے سالانہ 60 سے 70 ارب روپے کی آمدنی ہوتی ہے۔