انتخابی ٹکٹوں کی تقسیم شہباز شریف اور مریم نواز اپنے من پسند امیدواروں کو ٹکٹ دلوانے کے لیے سر گرم

شہباز شریف اور مریم نواز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

انتخابی ٹکٹوں کی تقسیم شہباز شریف اور مریم نواز اپنے من پسند امیدواروں کو ٹکٹ دلوانے کے لیے سر گرم

 

شہباز شریف اور مریم نواز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

انتخابی ٹکٹوں کی الاٹمنٹ مسلم لیگ ن پارٹی کے لیے ایک اہم چیلنج بن گئی ہے۔  شہباز شریف اور مریم نواز دونوں اپنے من پسند امیدواروں کو ٹکٹ دینے کے لیے بے چین ہیں۔  گوجرانوالہ میں شہباز شریف عطا تارڑ کی حمایت کرتے ہیں جبکہ مریم نواز محمود بشیر کی حامی ہیں۔

لاہور میں ایاز صادق اور شیخ روحیل کے درمیان مقابلے نے پارٹی قیادت کو مشکل میں ڈال دیا ہے۔  پارٹی کے اندر ذرائع کا دعویٰ ہے کہ تمام لڑی جانے والی نشستوں پر حتمی فیصلہ نواز شریف کا ہوگا۔  ان ذرائع کے مطابق این اے 76 جڑانوالہ میں مریم نواز کے حامی طلال چوہدری کو ٹکٹ دینے کے خواہشمند ہیں۔

اسی طرح گوجرانوالہ میں شہباز شریف پی ٹی آئی سے منحرف ہونے والے سابق ایم این اے ملک نواب شیر وسیر کی حمایت کر رہے ہیں۔  گوجرانوالہ میں بھی صورتحال کچھ ایسی ہی ہے جہاں شہباز شریف کا گروپ عطا اللہ تارڑ کی حمایت کرتا ہے جبکہ مریم نواز کا گروپ محمود بشیر ورک کو ٹکٹ دینے پر بضد ہے۔

لاہور میں ایاز صادق اور شیخ روحیل اصغر کے درمیان ہونے والا فیصلہ مسلم لیگ ن پارٹی کے لیے بھی درد سر بن گیا ہے۔  بہاولپور کے حلقہ این اے 172 میں مسلم لیگ ن کے چیف آرگنائزر طارق بشیر نے سعود مجید کو چیمہ پر ترجیح دی۔

تاہم، طارق بشیر چیمہ مسلم لیگ ن سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ حاصل کرنے پر اصرار کرتے ہیں، کیونکہ انہوں نے پی ٹی آئی کے بانی کے خلاف ووٹ دیا تھا۔  پارٹی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ تمام متنازعہ نشستوں کے حوالے سے حتمی فیصلہ نواز شریف کریں گے اور ان کا فیصلہ سب کو قبول ہوگا۔