سعودی حکومت نے AI پہ مبنی نیا ویزا سسٹم متعارف کروا دیا

سعودی حکومت نے AI پہ مںنی نیا ویزا سسٹم
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

سعودی حکومت نے AI پہ مبنی نیا ویزا سسٹم متعارف کروا دیا

سعودی حکومت نے AI پہ مںنی نیا ویزا سسٹم
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

کے ایس اے کی وزارت خارجہ نے حال ہی میں ریاض میں منعقدہ ڈیجیٹل گورنمنٹ فورم کے دوران سعودی حکومت نے AI پہ مبنی نیا ویزا سسٹم متعارف کروا دیا ہے جسے ‘KSA ویزا’ کہا جاتا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی (SPA) کے مطابق، یہ نظام 30 سے ​​زائد وزارتوں، حکام اور نجی شعبے کی تنظیموں سے منسلک ہے۔  یہ مختلف مقاصد جیسے حج، عمرہ، سیاحت، کاروباری دوروں اور روزگار کے لیے ویزا کی درخواستوں پر کارروائی کرنے کا ایک ذریعہ ہے۔  اس پلیٹ فارم کا بنیادی مقصد ویزا درخواست کے عمل کو ہموار اور آسان بنانا ہے۔

جانیے 2023 میں دنیا کے کس ملک کے لوگوں نے سب سے زیادہ ترسیلات زر اپنے ملک بھیجی

صارفین کی سہولت کے لیے، سسٹم میں ایک سمارٹ سرچ انجن شامل کیا گیا ہے جو دستیاب ویزوں کی شناخت میں مدد کرتا ہے۔  مزید برآں، اس میں ایک مرکزی نظام موجود ہے جو ویزا کی ضروریات اور درخواست کے طریقہ کار پر تفصیلی رہنمائی فراہم کرتا ہے۔مزید برآں، افراد سسٹم کے اندر ذاتی پروفائل بنا سکتے ہیں، جو مستقبل میں ویزا کی درخواستوں میں تیزی لائے گا۔

سعودی حکام نے اس بات پر زور دیا ہے کہ یہ پلیٹ فارم مصنوعی ذہانت جیسی جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتا ہے تاکہ ڈیٹا کی درست تصدیق کو یقینی بنایا جا سکے اور مجموعی کارکردگی کو بہتر بنایا جا سکے۔  نئے نظام تک رسائی کے لیے دلچسپی رکھنے والے افراد آفیشل ویب سائٹ ksavisa.sa پر جا سکتے ہیں۔

کیپٹل ہل پر حملہ امریکی عدالت نے ڈونلڈ ٹرمپ کو نااہل قرار دے دیا