عوام نومبر کے بجلی کے بلوں میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ بم کے لیے تیار ہو جائیں

فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

عوام نومبر کے بجلی کے بلوں میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ بم کے لیے تیار ہو جائیں

 

فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

نیپرا اس وقت بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 2 روپے اضافے کی تیاریاں کر رہی ہے۔  نومبر میں یہ اضافہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے طور پر کیا جا رہا ہے۔

جس کی وجہ ایندھن کی درآمد کی لاگت بتائی جا رہی ہے۔  حکومت پاکستان پہلے ہی پیٹرول کی قیمت میں 1 روپے 50 پیسے اضافہ کر چکی ہے۔  2 روپے اور ڈیزل کی قیمت میں 6 روپے سے زائد کمی کی گئی ہے۔

وفاقی حکومت کی ملکیت مرکزی پاور پرچیزنگ کمپنی نے نیپرا سے نومبر کے لیے بجلی کی قیمتوں میں 4 روپے 66 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دینے کی درخواست کی ہے۔

27 دسمبر کو عوامی سماعت ہوگی لیکن بدقسمتی سے نیپرا کی پیچیدہ شرائط کی وجہ سے عام شہریوں کو شرکت کی اجازت نہیں ہے۔  درخواست منظور ہونے کی صورت میں بجلی صارفین کو 40 ارب روپے کا اضافی بوجھ برداشت کرنا پڑے گا جو بجلی فروخت کرنے والی کمپنیوں کو جائے گا۔  تاہم کراچی کے عوام بجلی کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے نام پر اس اضافے سے مستثنیٰ ہوں گے۔