سرکاری افسران کی موجیں ختم بڑی پابندیاں لگا دی گئیں

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

سرکاری افسران کی موجیں ختم بڑی پابندیاں لگا دی گئیں

 

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

سرکاری افسران کی موجیں ختم کر کے حکومت نے غیر ملکی کورسز، ورکشاپس اور مکمل فنڈڈ کانفرنسوں میں شرکت کرنے اور الاؤنسز وصول کرنے کا رواج ختم ہو گیا ہے۔فیڈریشن نے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پنجاب حکومت نے یہ الاؤنسز کی فراہمی روک دی ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق سرکاری مہمان کے طور پر بیرون ملک جانے والے سول افسران کو اب پوری رقم کے بجائے صرف 30 فیصد یومیہ الاؤنس ملے گا۔

مزید برآں، مکمل فنڈ سے چلنے والے سیمینارز، ورکشاپس اور تربیتی کورسز میں شرکت کرنے والے سول افسران اب کسی قسم کے الاؤنسز کے اہل نہیں ہوں گے۔

مزید برآں، نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ جن سول افسران کو ڈونر ایجنسیوں کی جانب سے واپسی کے ٹکٹ اور رہائش فراہم کی جاتی ہے انہیں کوئی الاؤنس نہیں ملے گا۔

تاہم، جن افسران کو حکومت پاکستان کی جانب سے تربیت یا کورسز کے لیے بیرون ملک بھیجا جاتا ہے، انہیں پہلے ہفتے کے لیے مکمل یومیہ الاؤنس کے ساتھ ساتھ دورے کی مدت کے لیے ایک مقررہ رقم بھی ملے گی۔