عوام پیٹرولیم لیوی ہدف میں 49 ارب روپے کا اضافی بوجھ اٹھانے کے لیے ہو جائیں تیار

پیٹرولیم لیوی ہدف میں 49 ارب روپے کا اضافی بوجھ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

عوام پیٹرولیم لیوی ہدف میں 49 ارب روپے کا اضافی بوجھ اٹھانے کے لیے ہو جائیں تیار

پیٹرولیم لیوی ہدف میں 49 ارب روپے کا اضافی بوجھ
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

رواں مالی سال کے پیٹرولیم لیوی ہدف میں 49 ارب روپے کا اضافی بوجھ کرکے 918 ارب روپے کا ہدف حاصل کیا جائے گا۔  یہ امر اہم ہے کہ رواں مالی سال کے لیے پیٹرولیم لیوی کا موجودہ ہدف 869 ارب روپے ہے۔

فی الحال، حکومت پیٹرول پر 60 روپے فی لیٹر لیوی عائد کر رہی ہے، جو کہ قانون کی طرف سے اجازت دی گئی زیادہ سے زیادہ حد ہے۔  اس حد سے زیادہ لیوی بڑھانے کے لیے حکومت کو موجودہ قانون میں تبدیلیاں کرنے کی ضرورت ہوگی۔

ذرائع کے مطابق ٹیکس 49 ارب روپے بڑھانے کا آرڈیننس لانے کا منصوبہ ہے۔  یہ اقدام منتخب حکومت کے اقتدار میں آنے سے پہلے متوقع ہے۔

آئندہ مالی سال کے لیے پیٹرولیم لیوی کا ہدف 1065 ارب روپے مقرر کیا جائے گا۔  ذرائع کا کہنا ہے کہ کھپت بڑھانے سے 918 ارب روپے کا ہدف حاصل کیا جا سکتا ہے۔  اس میں پٹرولیم مصنوعات پر لیوی میں فی لیٹر اضافہ شامل ہو سکتا ہے۔

مزید برآں، یہ بھی بتایا گیا ہے کہ IMF اور وزارت خزانہ کے درمیان MEFP ڈرافٹ میں ہدف کو بڑھانے کے لیے ایک معاہدہ طے پا گیا ہے۔