شیخ رشید پر مقدموں کی بھرمار

شیخ رشید پر مقدموں
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

شیخ رشید پر مقدموں کی بھرمار

 

شیخ رشید پر مقدموں
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پنجاب حکومت نے عدالت کو دس واقعات کی فہرست فراہم کی ہے جس میں شیخ رشید کا ذکر ہے جس میں جی ایچ کیو حملہ بھی شامل ہے۔  اس میں شیخ رشید کو رحمان آباد میٹرو بس سٹیشن کو نذر آتش کرنے، آرمی میوزیم پر حملہ، ایک حساس ادارے کے دفتر پر حملہ، پتھراؤ اور آتش زنی سمیت دس جرائم میں مدعا علیہ کے طور پر درج کیا گیا ہے۔

کل 9 دسمبر کو جسٹس ملک اعجاز آصف سابق وزیر داخلہ کی دس مقدمات میں عبوری ضمانت کی درخواستوں پر غور کریں گے۔  پنجاب حکومت نے لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ کی سماعت کے دوران جسٹس چوہدری عبدالعزیز کی جانب سے شیخ رشید سے متعلق دس مقدمات کی رپورٹ جمع کرادی۔

جج نے کہا کہ عدالت مقدمات کی جاری تحقیقات میں شامل نہیں ہوگی۔  جب عدالت نے شیخ رشید کے وکیل سردار عبدالرزاق خان سے سوال کیا تو جواب میں ان کے کہنے کا مطلب یہ تھا کہ عدالت کو جمع کرائے گئے مقدمات کو قریب سے دیکھنا چاہتے ہے۔

چھ ماہ بعد 9 مئی کے کیسز میں شیخ رشید کا ذکر کیسے ہوا؟  عدالت نے کہا کہ شیخ رشید کے دس کیسز کی تفصیلات آچکی ہیں۔  آپ کو ان کی ایک کاپی دی گئی ہے۔  بعد ازاں سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کر دی گئی۔

اس دوران شیخ رشید نے اگست 2023 میں میڈیا کو بتایا کہ پنجاب حکومت نے انہیں بتایا ہے کہ ان کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں ہے۔  میرے خلاف دس مقدمات کی تفصیلات آج عدالت میں جمع کرائی گئیں۔

انہوں نے کہا کہ میری چھوٹی سی سیاست حلقہ 56 اور 57 کے لیے ہے۔  میں نے بچپن سے ہی یہ سوچا ہے: میں سب کے ساتھ چلتا ہوں۔  سب کو اداروں کا احترام کرنا چاہیے۔  شیخ رشید کے مطابق ہم نے پاکستان کے دونوں حلقوں میں کام کیا ہے۔