نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ کا فلسطین جنگ اور مسئلہ کشمیر پر بیان آ گیا

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ کا فلسطین جنگ اور مسئلہ کشمیر پر بیان آ گیا

 

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پاکستان کے قائم مقام وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے کہا ہے کہ غزہ کے تنازع کی کوئی سرحد نہیں ہے اور یہ پورے خطے میں پھیلنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔  جنگ نہ روکی گئی تو پورے خطے کو لپیٹ میں لے سکتی ہے۔  پاکستان مسئلہ فلسطین کے دو ریاستوں کے ساتھ مل کر حل کرنے کے حق میں ہے۔  اسرائیل کی طرف سے فلسطین میں شہریوں کا قتل عام قابل مذمت ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ جب تک مسئلہ کشمیر حل نہیں ہوتا، بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں جاری رکھے گا اور علاقائی امن ممکن نہیں ہو گا۔  ہماری خواہش ہے کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہو۔  کشمیریوں کے لیے اس بات کا اقرار ہے کہ ان کا خطہ پاکستان کا لازمی جزو ہے۔

اس کے علاوہ، نگراں وزیر اعظم نے سماجی، سیاسی اور دہشت گردی کے مسائل سے نمٹنے کی ضرورت کا حوالہ دیتے ہوئے، افغانستان سے غیر قانونی تارکین وطن کو واپسی کی اجازت دینے کے ملک کے فیصلے پر پاکستان کے اصولی موقف کی وضاحت کی۔