پاکستان کے اگلے صدر مولانا فضل الرحمان ہو گے۔حافظ حمد اللہ

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پاکستان کے اگلے صدر مولانا فضل الرحمان ہو گے۔حافظ حمد اللہ

 

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے حافظ حمد اللہ نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کو دس جماعتوں کے ساتھ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے قیام پر صدر مملکت کا اعزاز دیا گیا۔  بحیثیت صدر مولانا فضل الرحمان عہدہ سنبھالیں گے۔  پی ڈی ایم کے صدر کی حیثیت سے خدمات انجام دینے کے بعد مولانا فضل الرحمان پوری قوم کے صدر کے لیے انتخاب لڑنے کے اہل ہیں۔

حافظ حمد اللہ نے کہا کہ باپ بیٹی کے ساتھ ساتھ پی پی اور ن لیگ بلوچستان پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔  آئیے دیکھیں کیا ہوتا ہے.  ہمارا اصل مسئلہ پی ٹی آئی کے ایجنڈے کا تھا۔  کیا گوہر خان کے علاوہ پی ٹی آئی میں کوئی اور بانی کارکن نہیں تھا جسے چیرمین بنایا جاتا ؟  پی ٹی آئی اب سندھ میں جی ڈی اے کا حصہ نہیں ہے۔

مولانا فضل الرحمٰن نے پہلے کہا تھا کہ اگر کوئی بااختیار عہدے پر ہے تو اسے تمام شہریوں کے حقوق کے دفاع کے لیے اس عہدے کا استعمال کرنا چاہیے۔  امتیازی سلوک کی کوئی جگہ نہیں ہے۔  میری قوم میں سکھ، عیسائی اور ہندو سب میرے حقدار ہیں۔

جے یو آئی کے رہنما مولانا عبدالغفور حیدری نے ملتان میں کہا کہ سیاسی جماعتوں کے کردار کے باوجود ملک میں غربت اور بے روزگاری بدستور موجود ہے۔  ابھی تک جماعت کے کسی رکن پر کرپشن کا الزام نہیں لگایا گیا۔  مولانا فضل الرحمان نے ملک کے لیے پی ٹی ائی کے فتنے کو ٹال دیا۔