پاکستانی کرکٹ ٹیم سڈنی ایئرپورٹ پر اپنا سامان ٹرک پر خود لوڈ کرنے پر مجبور

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

پاکستانی کرکٹ ٹیم سڈنی ایئرپورٹ پر اپنا سامان ٹرک پر خود لوڈ کرنے پر مجبور

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

پاکستانی اسکواڈ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز کھیلنے کے لیے سڈنی ایئرپورٹ پر پہنچی تو شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا۔

کھلاڑیوں کے بیگ سڈنی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے سے مقامی ٹرمینل پر منتقل کرنے کا کوئی منصوبہ نہیں تھا۔

معاملہ تب سامنے آیا جب کھلاڑیوں کی اپنے بیگ ٹرک پر لوڈ کرنے کی ویڈیو وائرل ہوئی

کوچنگ سٹاف، محمد وسیم جونیئر، اور قومی کھلاڑی محمد رضوان سبھی کو تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ اپنا بھاری سامان خود ٹرک میں لوڈ کر رہے ہیں۔

کھلاڑیوں نے مبینہ طور پر ٹیم مینیجر نوید اکرم چیمہ کی جانب سے کی جانے والی ذیلی تیاریوں کے بارے میں شکایت کی، جب کہ پی سی بی اور کرکٹ آسٹریلیا کے رابطہ افسر نے پاکستانی ٹیم کے لیے بہت کم تیاری کی۔

ذرائع کے مطابق ٹیم منیجر نے کھلاڑیوں کے گیئر لے جانے اور اتارنے کے لیے مدد لینے کے خلاف فیصلہ کیا۔

اس حوالے سے قومی ٹیم کے ترجمان نے ہر الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی ٹیم کے لیے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ قومی اسکواڈ ٹیسٹ سیریز کے لیے کینبرا پہنچ چکا ہے۔  سیریز سے قبل قومی ٹیم 6-9 دسمبر کو کینبرا کے مانوکا اوول میں پرائم منسٹر الیون سے کھیلے گی۔

دونوں ٹیمیں دوسرے ٹیسٹ کے لیے 14 دسمبر کو پرتھ میں، 26-30 دسمبر کو میلبورن میں اور تیسرے اور آخری ٹیسٹ کے لیے 3 جنوری 2024 کو سڈنی میں آمنے سامنے ہوں گی۔