جنگ بندی ختم ہوتے ہی اسرائیل کی غزہ پر وحشیانہ بمباری

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

جنگ بندی ختم ہوتے ہی اسرائیل کی غزہ پر وحشیانہ بمباری

 

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

اسرائیل نے جنگ بندی ختم ہوتے ہی شمالی غزہ پر وحشیانہ حملے شروع کر دیے، ایک ہی حملے میں 16 سے زائد فلسطینی شہید ہو گئے۔  تفصیلات میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان سات روز تک جاری رہنے والی جنگ بندی کو مزید طول نہ دیا جا سکا اور یہ ختم ہوتے ہی اسرائیل کا ظالمانہ رویہ دوبارہ شروع ہو گیا۔

ذرائع کا دعویٰ ہے کہ جیسے ہی اسرائیلی فوج نے شمالی غزہ پر حملہ کیا تو اس نے حماس پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا اور ایسا کرنے کے بہانے فلسطینیوں کے قتل عام کو بڑھا دیا۔

غزہ کی وزارت صحت کے مطابق اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں بچوں سمیت سولہ سے زائد فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج نے صبح سویرے شمالی غزہ پر میزائل داغنا شروع کر دیا۔

اس سلسلے میں فلسطین پر بھی جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا گیا ہے۔صہیونیوں نے فضائی حملے شروع کیے ہیں اور خان یونس کے مشرقی علاقے کے ساتھ ساتھ پڑوسی علاقوں پر ایک محاذ قائم کیا ہے۔

اس دوران، غزہ کے شمالی علاقے جبالیہ میں ایک گھر پر اسرائیلی جاسوس طیارے کے حملے کا نشانہ معصوم شہری تھے۔ واضح رہے کہ حماس نے اسرائیل کے ان الزامات کا کوئی جواب نہیں دیا ہے کہ اس نے جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔