حکومت نے صدارتی احکامات کے ذریعے چار اہم ادارے پرائیویٹ کر دیے

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

حکومت نے صدارتی احکامات کے ذریعے چار اہم ادارے پرائیویٹ کر دیے

 

فوٹو بشکریہ گوگل امیجز
فوٹو بشکریہ گوگل امیجز

 

صدارتی احکامات کے ذریعے چار سرکاری اداروں کو سرکاری سرپرستی سے آزاد کر کے انتظامیہ نے آئی ایم ایف کی طرف سے عائد کردہ ایک اور شرط کی تعمیل کر دی۔

  ایکسپریس نیوز کی رپورٹ کے مطابق صدر نے چار سرکاری اداروں ریڈیو پاکستان، این ایچ اے، پاکستان نیشنل شپنگ کارپوریشن، اور پوسٹل سروسز سے متعلق آرڈیننس کی منظوری دے دی ہے جو کہ خود مختار بورڈز اور غیر منافع بخش تنظیمیں ہیں جن سے نقصان ہوتا ہے۔  انہیں اب حکومتی طرفداری نہیں ملے گی۔

  مزید برآں، انتظامیہ نے پی ٹی وی، کسٹمز اور پاکستان اسٹیل کے لیے صدارتی آرڈیننس لانے اور انہیں حکومتی سرپرستی سے آزاد کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

  دیگر چار کم کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے سرکاری اداروں کے انتظامی ڈھانچے کو ایک نیا فریم ورک دیا گیا ہے، اور آگے بڑھتے ہوئے، یہ سب ایک آزاد بورڈ کی نگرانی میں کام کریں گے۔

  رپورٹس کے مطابق، چھ سے بارہ افراد آزاد حکومتی اداروں کا انتظامی بورڈ بنائیں گے۔